32 C
Lahore
Thursday, July 18, 2024

Book Store

چھل بَل

چَھل بَل ۔۔۔


بھائی کے آفس میں ایک کام چور بندہ ہے۔ اکثر باس سے ڈانٹ کھا کے نکلتا ہے تو رونا دھونا مچا دیتا ہے کہ میں ؟ ریزائین لکھ رہا ہوں ۔ میں جارہا ہوں۔ تمام کولیگ اسے منانے , سمجھانے لگ جاتے ہیں کہ اتنی مہنگائی ہے کیا کرو گے کہاں جاؤ گے؟  بے روزگار ہو جاؤ گے ۔ سب کی منت کرنے پہ پھر اکڑ کے میز پہ جم جاتا ہے ۔ بھائی کہتے ہیں جانا جوانا اس نے ہے نہیں، بس بھرم دکھاتا ہے کہ کوئی مجھے روک لے ۔۔۔ اور ہم روک لیتے ہیں ۔
اسی طرح ہماری سلطنت گروپ میں ایک خاتون نے اپنے مسٔلے کے حل کے لیے پوسٹ لگائی کہ میری بھابھی تمام دن آرام کرتی ہیں ۔ گھر کے کسی کام کو ہاتھ نہیں لگاتیں۔ سب گھر والوں پہ رعب جماتی ہیں۔  کوئی چوں چاں کرے تو کہتی ہیں میں خود کشی کرنے جارہی ہوں ۔

ہم پکڑ پکڑ کے روکتے ہیں ۔ بڑی مشکل سے ٹھنڈا کرتے ہیں ۔۔ مجبوراً اب چپ رہتے ہیں کہ خود کشی کر لی تو ہم پہ کیس بن جائے گا ۔ بچے رل جائیں گے ۔ بھائی کی زندگی خراب ہوگی لیکن بھابھی کے روئیے سے بہت پریشان ہیں ۔ جملے کچھ بدل گئے ہیں لیکن مفہوم یہی تھا ۔۔
میں نے مشورہ دیا بہن اب آپ کی بھابھی خود کشی کرنے لگیں تو بالکل مت روکیے گا ، بلکہ تمام گھر والے کمرا بند کر کے بیٹھ جائیے گا ۔خود ہی آرام سے بیٹھ جائیں گی

اتنا آسان نہیں ہے دنیا چھوڑنا ۔۔۔

زارا مظہر

Related Articles

Stay Connected

2,000FansLike
2,000FollowersFollow
2,000SubscribersSubscribe
گوشۂ خاصspot_img

Latest Articles